جمعرات 04 جون 2020ء
جمعرات 04 جون 2020ء

دبئی، فاز ٹاور کی تقریب رونمائی،سرمایہ کاروں کی دلچسپی

دبئی (دھرتی نیوز) میپلز رئیل اسٹیٹ دبئی اینڈ فاز اسٹیٹ اینڈ بلڈرز بحریہ ٹاؤن راولپنڈی کے اشتراک سے ہونے والے منصوبے فاز ٹاور کی تقریب رونمائی کی تقریب ایک دبئی کے مقامی ہوٹل میں کی گئی۔میپلز رئیل اسٹیٹ دبئی  اور فاز اسٹیٹ اینڈ بلڈرز  نے بحریہ ٹاؤن راولپنڈی میں مشترکہ رئیل اسٹیٹ منصوبہ“فاز ٹاور“کو حتمی شکل دے دی۔ اس منصوبے کی باقاعدہ لانچنگ پاکستان پراپرٹی شو کے دوران ورلڈ ٹریڈ سینٹر دبئی میں کی گئی۔ اس منصوبے میں رہائشی دو اور تین بیڈ رومز اپارٹمنٹس کے علاوہ کمرشل دوکانیں بھی شامل  ہیں۔ یہ منصوبہ بحریہ ٹاؤن فیز سیون کی پرائم لوکیشن کلاک ٹاور کے نزدیک انتہائی پرکشش جگہ پر واقع ہے جہاں ضروریات زندگی کی تمام سہولتیں پیدل  فاصلے پر موجود ہیں۔ جسمیں فیز سات کی سب سے خوبصورت کلاک ٹاور، پاکستان میں موجود بہترین کھانے اور شاپنگ کی برانڈز کے لئیے جانی جانے والی فوڈ اسٹریٹ، گالف کلب، سینی پلکیس اور متحدد لوکل گراسری کی دوکانوں کے علاوہ ضروریات زندگی کی بہترین سہولیات موجود ہیں۔ گزشتہ رات میپلز رئیل اسٹیٹ کے سی۔ ای۔ اور متحرک بزنس مین راجہ راشد علی نے ایک عشائیے میں اس پرجیکٹ کی تفصیلات بیان کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک بہترین وقت ہے جب ہم اپنے ملک کو کچھ لوٹا سکیں۔ پاکستان اس وقت انتہائی مشکل حالات سے گزر رہا ہے اور ہمیں چاہئیے کہ ہم اپنی تمام تر توابائیاں پاکستان کی اکانومی کو بہتر کرنے مین صرف کریں کیونکہ مظبوط اور مستحکم پاکستان ہی مسئلہ کشمیر کے حل کے لئیے بہتر ثابت ہوگا۔ اسکے ساتھ ساتھ جو ہمارے اس منصوبے میں اپنی محنت کی کمائی انوسیٹ کریں گے ہم نے ناصرف ان کے لئیے ماہانہ آفورڈ ایبل تین سالہ آسان اقساط رکھی ہیں بلکہ انکی آسانی کے لئے دبئی میں آفس کا بھی قائم کیا ہے۔  جس کے ذریعے وہ اپنے جائیداد کی خرید و فروخت کر سکیں گے۔ اس موقع پر فاز اسٹیٹ اینڈ بلڈرز کے مینیجنگ ڈائریکٹر سردار عمران عزیز کا کہنا تھا کہ اس رہائشی اور کمرشل منصوبے کا مقصد اپنے اْن کشمیری اور پاکستانی بھائیوں کو جو دیار غیر میں رہ کر اپنے خاندانوں کو سپورٹ کر رہے ہیں انکے لئیے ایسا بہترین رہائشی منصوبہ تعمیر کرنا ہے جہاں وہ دبئی طرز کی زندگی گزار سکیں۔ اس موقع پر عمران عزیز نے پونچھ ڈویڑن میں پونچھ چیمبر آف کمرس اینڈ انڈسٹری کی ضرورت اور افادیت کے ساتھ ساتھ کشمیر بزنس کونسل کی ضرورت اور ترجیح بنیادوں پر اس کو فعال کرنے کی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوے شرکا۶ محفل کو پاکستان میں انوسٹمنٹ کرنے کے لئیے زور دیا تاکہ کشمیر میں مزید روزگار کے مواقع پیدا ہو سکیں اور ہماری آنے والی نسلوں کو کشمیر میں رہ کر اپنے اپنے سمال اور لارج سکیل کاروبار کرنے کی طرف راغب کیا جا سکے۔ آخر میں شرکاء  محفل جن میں مسلم سوسائٹی یو اے ای کے صدر ڈاکٹر شفقت، جموں کشمیر جرنلسٹ فورم کے صدر راجہ اسد، راجہ شہباز، راجہ شجاعت، پاک چنار وونگ کے صدر داؤد شریف، معروف بزنس شخصیت راجہ فضل الہی، بسٹ اینڈ بسٹ کمپنی کے سی ای او سردار نیاز، اے آر جی گروپ کے بانی و سی ای او آصف راٹھور، راجہ ریاست، راجہ واجد کبیر، راجہ نئیر حنیف راجہ عامر اور دیگر نے اس منصوبے کو نا صرف سراہا بلکہ اس کی کامیابی کے لئیے اپنا اپنا کردار ادا کرنے یقین دہانی کرائی۔

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم