هفته 18  اگست 2018ء
هفته 18  اگست 2018ء

مظفراباد، اشرف قرےشی کے قتل کا فےصلہ،دو مجرمان کو عمر قید

مظفرآباد(دھرتی نیوز)سپرےم کورٹ آف آزاد جموں وکشمیر نے تاجر جائنٹ کمیٹی کے چےئرمےن مرحوم الحاج اشرف قرےشی کے قتل کا فےصلہ سنا دےا ۔دو مجرمان کو عمر قےد جبکہ دو ملزمان کو بری کر دیا گےا ،الحاج اشرف قرےشی کے قتل کا فےصلہ قبل ازےں سپریم کورٹ نے سنایا تھا ۔سپریم کورٹ نے اپنے فےصلے مےں مجرمان کو بری کر دیا تھا ،سپریم کورٹ کے اس فےصلے کے خلاف مقتول الحاج اشرف قرےشی کے ورثاءنے پانچ سال قبل سپرےم کورٹ میں نظرثانی کی درخواست دائر کی تھی ۔پانچ سال کے بعد سپرےم کورٹ نے اپنے فےصلے مےں الحاج اشرف قرےشی کے دو قاتلوں ،رشےد گریستہ اور ناصر علی کو عمر قےد 25-25سال کی سزا سنا دی ہے جبکہ دو ملزمان توفےق گریستہ اورحامل گریستہ کو بری کر دیا ۔سپرےم کورٹ کے 3رکنی بےنچ نے نظر ثانی کی درخواست کی سماعت کی ۔بےنچ مےںجسٹس راجہ سعےد اکرم ،جسٹس غلام مصطفیٰ مغل ،جسٹس سردار عبدالحمید شامل ہیں نے جمعہ کو فیصلہ سنادیا قبل ازیں ماتحت عدلیہ اور ہائی کورٹ وشریعت کورٹ نے مجرمان کو سزائے موت سنائی تھی مجرموں نے سپریم کورٹ میں اپیل کی جس کے بعد سپریم کورٹ نے ماتحت عدلیہ کے فیصلوں کو کالعدم قراردیتے ہوئے تمام کو بری کردیا تھا جس کے خلاف الحاج اشرف قریشی کے ورثاءنے سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی اپیل دائر کی تھی ۔مقتول الحاج اشرف کے ورثاءکی جانب سے مقدمہ کی پیروی سےنئر قانون دان سردار عبدالرزاق نے کی ۔الحاج اشرف قرےشی کو 24جولائی2008¾ کو قتل کر کے نعش بکس مےں بند کرنے کے بعد کوہالہ کے مقام پر درےائے جہلم مےں پھےنک دی گئی تھی جو کہ منگلا سے برآمد ہوئی ،الحاج اشرف قرےشی کے ورثاءنے سپرےم کورٹ کے فےصلے کو انصاف پر مبنی قرار ددےتے ہوئے اطمےنان کااظہار کیا ۔یاد رہے کہ آزادکشمیر کی عدالتی تاریخ میں یہ پہلا مقدمہ ہے کہ سپریم کورٹ نے نظر ثانی کی اپیل پر اپنا سابقہ فیصلہ کالعدم قراردے کر مقتول کے ورثاءکو انصاف فراہم کیا۔فیصلے کے وقت عدالت میں دونوں مجرم موجود نہ تھے گریستہ فیملی کے مطابق رشید گریستہ راولپنڈی میں علالت کے باعث زیر علاج ہے جبکہ دوسرا ملزم ناصر علی جو کہ پیشہ ور قاتل ہے کا تعلق پنجاب سے ہے دونوں کی گرفتاری کے لیے عدالت سے احکامات جاری کردیئے گئے ہیں۔  

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم