هفته 26 مئی 2018ء
هفته 26 مئی 2018ء

راولاکوٹ دھرنے سے حکومت کے ساتھ ہمارے مذاکرات کر دھچکا لگا،سینئر وائس چیئرمین (جے کے ایل ایف) عبدالحمید بٹ

 راولپنڈی (دھرتی نیوز) جموں کشمیر لبریشن فرنٹ(جے کے ایل ایف) کے سینئر وائس چیئرمین عبدالحمید بٹ سوشل میڈیا پر کارکنوں کے نام جاری اپنے ایک خط میں کہاکہ گزشتہ چند دنوں سے واٹس ایپ گروپوں میں راولاکوٹ دھرنے کے حوالے سے چند ساتھیوں کی آراءو تجاویز کے اظہار پر اس حد تک دلبرداشتہ ہوا ہوں کہ مجھے آپ کے نام یہ خط لکھنا پڑ رہا ہے ۔ ”برادران ، جس انداز میں آپ اپنی آراءاور تیز طرار کمنٹس کر رہے ہیں اس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ آپ پارٹی کے اندر فیصلہ ساز اداروں کی اہلیت اور ان اداروں میں ہونے والے فیصلوں کو چیلنج کرنے پر تلے ہوئے ہیں ۔ بجائے اس کے کہ ہم اپنے اپنے زونز میں موجود اداروں میں اپنی رائے رکھتے اور یہاں پر موجود اداروں کے اندر ہونےوالے فیصلوں پر لبیک کہتے ، آپ میں سے چند ساتھیوں کا رویہ اس کے برعکس نظر آ رہا ہے ۔ معزز ممبران ، میں بحیثیت سینئر وائس چیئرمین کے راولاکوٹ دھرنے کے حوالے سے اتنا کہنا چاہوں گا کہ یہ پارٹی کا فیصلہ نہیں ہے اور کیا وجہ بنی ؟ کیوں ایسا قدم اٹھایا گیا اور کون کون اس میں ملوث ہے ؟ اس کی نشاندہی دھرنے کے خاتمے کے بعد کی جائے گی اور ملوث افراد کےخلاف باضابطہ تادیبی کارروائی عمل میں لائی جائے گی کیونکہ اس اقدام سے اولاً یہ کہ فیصلوں کی خلاف ورزی کی گئی جس سے پارٹی کی ساکھ متاثر ہوئی اور دوئم یہ کہ پارٹی کی اعلیٰ قیادت نعیم بٹ شہید کے حوالے سے حکومت کے ساتھ جن مذاکرات میں مصروف تھی ان کو بھی دھچکا لگا ہے ۔ معزز ممبران ، اس خط کے ذریعے آپ کے ساتھ کسی بحث و مُباحثے میں الجھنا مقصود نہیں جیسا کہ یہاں ہو رہا ہے بلکہ مجھے واٹس ایپ گروپس میں ہونے والی طوفان بد تمیزی اور بے ہنگم بحث کی روک تھام کیلئے آپ کو صاف و شفاف الفاظ میں یہ ہدایت دینا مقصود ہے کہ سوشل میڈیا کو اس انداز میں استعمال کرنا بند کیا جائے ۔ اگر آپ نے کوئی رائے یا تجویز دینی ہے تو وہ آپ اپنے زون میں موجود اداروں میں دیں اور ہم آپ کیلئے ان اداروں کے ذریعے ہی اپنی رائے اور فیصلوں سے آپ کو آگاہ کرینگے کیونکہ یہ سوشل میڈیا پارٹی کا کوئی فیصلہ ساز پلیٹ فارم یا ادارہ نہیں ہے ۔ معزز ممبران ، چیئرمین جموں کشمیر لبریشن فرنٹ محمد یاسین ملک صاحب نے بھی اس سے قبل سوشل میڈیا کے حوالے سے اپنی پوزیشن واضح کی ہے اس لیے میں بحیثیت ایک ذمہ دار کے آپ ساتھیوں کو یہ ہدایت دیتا ہوں کہ اس طرح کی بحث فوری طور پر روک لی جائے ، بصورت دیگر ڈسپلن شکنی کے مرتکب ممبر یا ممبران کے خلاف تا دیبی کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔ امید ہے کہ تمام زونل صدور اس ہدایت کا نوٹس لے کر زون میں موجود اپنے ممبران کیلئے ضروری ہدایات جاری کرینگے اور اس پر سختی سے عمل پیرا رہیں گے ۔