بدھ 26 جون 2019ء
بدھ 26 جون 2019ء

ایرا ء نے آزادکشمیر کے منصوبوں کے لئے سہ ماہی قسط روک دی

مظفرآباد(نامہ نگار)حکومت آزادکشمیر کی عدم توجہی ، ایرا نے آزادکشمیر کے زلزلہ متاثرہ علاقوں کے فنڈز خیبرپختونخواہ کے منصوبوں کی تکمیل کیلئے منتقل کردئیے ،سیکرٹری سیرا کی عد م تعیناتی کے باعث ایرا ء حکام نے موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے آزادکشمیر کے منصوبوں کے لئے سہ ماہی قسط روک دی ، سربراہ ادارہ نہ ہونے سے زلزلہ متاثرہ علاقوں میں تعمیراتی کام ٹھپ ہوگیا ، مظفرآباد ، راولاکوٹ اورباغ کے ڈسٹرکٹ ری کنسٹرکشن یونٹس عملاً غیر فعال ہوگئے ، سہ ماہی قسط جاری نہ ہونے کی وجہ سے تعلیمی اداروں سمیت سینکڑوں منصوبوں پر کام بند ہوگیا ، سیرا افسران سے اس بابت موقف لینے کیلئے رابطہ کیا گیا تو افسران نے رابطہ نمبرز بند کردئیے ،تعلیمی اداروں کی عمارات سمیت مختلف منصوبوں پر کام کرنے والے ٹھیکیداروں میں تشویش کی لہردوڑ گئی ، ، فنڈز کی عدم دستیابی کے باعث سیر ااور ڈی آر یوز میں افسران کے زیر استعمال گاڑیاں ٹرانسپورٹ پول میں کھڑی کردی گئی ، بلات کی عدم ادائیگی کے باعث پیٹرول پمپ مالکان نے بھی سیرا انتظامیہ کے سامنے ہاتھ کھڑے کردئیے ، تعمیرنو منصوبوں پر کام کرنے والے ٹھیکیداروں اور تعمیراتی کمپنیوں کے کروڑوں روپے کے بلات سیرا کے ذمہ واجب الاداء ہیں جو ڈوبنے کا خدشہ ہے ، دوسری جانب فنڈز کو خیبرپختونخواہ منتقل کرنے کی اطلاعات پر زلزلہ متاثرہ علاقوں کے عوام میں شدید غم وغصہ پایا جارہا ہے ،دو ہفتے سے سیکرٹری سیرا کی عدم تعیناتی وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر خان ،سپیکر شاہ غلام قادر اور وزیرتعلیم بیرسٹر افتخارگیلانی ، وزیر جنگلات سردار میر اکبر، وزیرتعمیرات عامہ چوہدری عزیز ، اور وزیراطلاعات مشتاق احمد منہاس کی تعمیرنو پراجیکٹ سے لاتعلقی اور عدم توجہی کاواضح ثبوت دکھائی دے رہا ہے ، گزشتہ دو ہفتے سے سیکرٹری سیرا نہ ہونے کے باعث منصوبوں پر کام کرنے والے ٹھیکیداروں کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوگیا ہے ، زلزلہ متاثرہ منصوبوں پر کام کرنے والے ٹھیکیداروں نے حکومت آزادکشمیر سے پُرزور مطالبہ کیا ہے کہ ایرا ء کی جانب سے آزادکشمیر کے فنڈز خیبرپختونخواہ منتقلی رکوانے کے اقدامات کرتے ہوئے سیکرٹری سیرا کی تعیناتی عمل میں لائی جائے ،واضح رہے کہ دو ہزارسے زائد تعلیمی اداروں کے لاکھوں طلباء آج بھی شدید سرد موسم میں کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں ۔

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم