اتوار 07 جون 2020ء
اتوار 07 جون 2020ء

محکمہ خوراک کے فیلڈ ملازمین کی عبوری تنظیم کا اعلان

راولاکوٹ(دھرتی نیوز) فوڈ اتھارٹی کو لوکل گورنمنٹ کے حوالے کرنے اور بتدریج محکمہ خوراک کو ختم کئے جانے کی پالیسی کے خلاف محکمہ خوراک کے ملازمین نے صف بندی شروع کر دی ہے۔ محکمہ خوراک کے ملازمین نے آزادکشمیر کے مرکزی اور ڈویژنل عہدیداران کا اعلان کرتے ہوئے ٹرانسپورٹیشن سبسڈی کے خاتمے اور فوڈ اتھارٹی کو لوکل گورنمنٹ کے حوالے کئے جانے کے خلاف جدوجہد کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ اس سلسلہ میں محکمہ خوراک کے فیلڈ ملازمین کا اہم اجلاس راولاکوٹ کے مقام پر منعقدہ کیا گیا، جس میں تمام اضلاع سے فیلڈ سٹاف نے شرکت کی، اجلاس میں متفقہ طور پر محکمہ خوراک کی عبوری تنظیم کا اعلان کیا گیا، اس کے ساتھ ساتھ تینوں ڈویژن ہا کی عبوری تنظیموں کا بھی اعلان کیا گیا۔ اجلاس میں اعلان کی گئی عبوری تنظیم کے مطابق شفیع اعوان سپرست اعلیٰ، سید نوید نقوی صدر، ناظم افتخار سیکرٹری جنرل، سید امتیاز شاہ سینئر نائب صدر، زوار حسین سیکرٹری اطلاعات نامزد کئے گئے، جبکہ مظفرآباد ڈویژن کیلئے فرغ مغل صدر، خواجہ ممتاز جنرل سیکرٹری، پونچھ ڈویژن کیلئے سردار ارشد صادق صدر، سردار رضا خان جنرل سیکرٹری نامزد کئے گئے، جبکہ میرپور ڈویژن کیلئے سید ذوالفقار علی شاہ صدر اور سردار خورشید کو جنرل سیکرٹری نامزد کیا گیا ہے۔ تمام عہدیداران کو عبوری طور پر تمام فیلڈ سٹاف کی مشاورت کے بعد متفقہ طو پر نامزد کیا گیا۔ اجلاس میں متفقہ طو ر پر کئے گئے فیصلہ جات کے مطابق نومنتخب تنظیم کے عہدیداران فوری طور پر فوڈ اتھارٹی کے حوالے سے جملہ حکومتی اور سیاسی حکام سے ملاقات کرینگے، ٹرانسپورٹیشن کی مد میں دی جانے والی سبسڈی کے خاتمے کی کوششیں عوام کے استحصال کا باعث بنیں گی، سبسڈی کے خاتمے کے خلاف جدوجہد کی جائے گی، اجلاس میں سیکرٹری خوراک اور ڈائریکٹر کوراک سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ سبسڈی اور فوڈ اتھارٹے کے معاملہ میں اپنا مثبت کردار ادا کریں اور محکمہ کی نیک نامی کا باعث بنیں، فوڈ اتھارٹی کی کسی دوسرے محکمہ کو منتقل کئے جانے کی کوششیں قابل مذمت ہیں، اس ضمن میں فیلڈ سٹاف کسی بھی قسم کے اقدامات کیلئے تیار ہے۔ ملازم رہنماؤں کا کہنا تھا کہ محکمہ کی طرف سے فوڈ اتھارٹی کے متعلق ارسال کردہ سمری جس میں اس بات کا اظہار کیا گیا ہے کہ محکمہ خوراک و فوڈ اتھارٹی کے اندر صلاحیت نہ ہے کہ وہ فوڈ اتھارٹی ایکٹ پر عملدرآمد کروا سکے، محکمہ خوراک کے اعلیٰ حکام کی طرف سے بے بنیاد اور حقائق کے منافع ہے۔ تمام فیلڈ سٹاف ارسال کردہ سمری کو مسترد کرتا ہے، فیلڈ سٹاف نے یہ دعویٰ کیا کہ محکمہ کوراک کا فیلڈ سٹاف تاؤ بٹ سے بھمبر تک ہر جگہ کام کررہا ہے، جبکہ محکمہ لوکل گورنمنٹ محض چھ اضلاع کے شہری علاقوں میں کام کر رہا ہے، لہٰذا حکومت کو ارسال کردہ سمری میں محکمہ خوراک کی صلاحیت اور اہلیت نہ ہونے کے الزامات کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم ہر سطح پر محکمہ کا دفاع کریں گے اور ایکشن کمیٹی اور فوڈ ایمپلائز ایسوسی  ایشن محکمہ خوراک اور فوڈ اتھارٹی کے خلاف ہونے والی ہر سازش کو ناکام بنائیگی۔  

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم