پیر 18 اکتوبر 2021ء
پیر 18 اکتوبر 2021ء

۔الیکشن 2021،دسویں پارلیمانی انتخابات،کئی مقامات پر جھڑپیں

راولاکوٹ(نمائندگان،دھرتی نیوز)آزادکشمیرمیں دسویں پارلیمانی انتخابات کے لئے پولنگ کاسلسلہ صبح آٹھ بجے وقت مقررہ پرشروع ہواتھا۔کسی وقفے کے بغیرجاری رہا۔پولنگ اسٹیشنوں پرووٹروں کی لمبی لمبی قطاریں لگی ہیں۔اس سے اندازہ ہوتاہے کہ ووٹ ڈالنے کامجموعی ٹرن آؤٹ 55فیصدتک جاسکتاہے۔مختلف علاقوں سے آمدہ اطلاعات کے مطابق مجموعی طورپرپولنگ پرامن ہورہی ہے تاہم کوٹلی میرپوراورباغ کے بعض پولنگ اسٹیشنوں پرمعمولی جھڑپیں ہوئیں۔کوٹلی کے علاقے  چڑہوئی کے ایک پولنگ اسٹیشن سے فائرنگ سے ایک کارکن کے جاں بحق ہونے کی اطلاع ہے جبکہ بعض زخمی ہوئے ہیں،وسطی باغ کے ایک پولنگ اسٹیشن پردوگروپوں کے درمیان تصادم سے پولنگ کوعارضی طورپرروک دیاگیاہے۔میرپورڈویژن کے بعدپولنگ اسٹیشنزپرمعمولی جھڑپوں کی اطلاعات ہیں سماہنی میں پی ٹی آئی کے نامزدامیدوارجبکہ پیپلزپارٹی کے نامزدامیدوارکے قافلوں پرفائرنگ کی اطلاعات ہیں۔مظفرآبادسے اطلاعات کے مطابق پاکستان پیپلزپارٹی کے نامزدامیدوارچوہدری لطیف اکبرکے حلقہ میں بعض پولنگ اسٹیشنوں پرجھڑپوں کی اطلاعات ہیں جن سے چارکے قریب کارکنان زخمی ہوئے ہیں۔باغ سے ہمارے نمائندے کے مطا بق پولیس نے دودن قبل پی ٹی آئی کے قافلے پرفائرنگ کرنے والے نامزدملزمان میں سے ایک کوگرفتارکرلیاہے جبکہ مظفرآبادمیں دودن پہلے ہونے والی جھڑپوں میں سے  چارملزمان کوگرفتارکردیاگیاہے الیکشن کمیشن کے نمائندگان اورریٹرینگ آفیسران نے مختلف پولنگ اسٹیشنز کادورہ کیااورامن عامہ کاجائزہ لیاہے۔

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم