منگل 07 دسمبر 2021ء
منگل 07 دسمبر 2021ء

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان کے وفد کا دورہ مظفرآباد

مظفرآباد(پی آئی ڈی)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان کے وفد کا دورہ مظفرآباد،وفد کی قیادت چیئرمین کمیٹی سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کی جبکہ وفد میں سینیٹر فاروق ایچ نائیک، سینیٹر فلک ناز، سینیٹر محمد قاسم، سینیٹر عرفان الحق صدیقی شامل تھے۔ ایڈیشنل چیف سیکرٹری (ترقیات)آزادجموں وکشمیر ڈاکٹر ساجد محمود چوہان نے پیر کے روز سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان کے وفد کو آزادجموں کشمیر میں گزشتہ تین سال کے دوران ہونے والے ترقیاتی منصوبوں اور مستقبل کے منصوبوں کے حوالہ سے بریفنگ دی جبکہ ایڈیشنل چیف سیکرٹری جنرل ڈاکٹر سید آصف حسین نے آزاد کشمیر کے جنرل الیکشن 2021کے حوالہ سے تفصیلی بریفنگ دی۔وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقی آزادجموں کشمیر چوہدری محمد رشید بھی اس موقع پر موجود تھے۔ وفد کو بریفنگ دیتے ہوئے ایڈیشنل چیف سیکرٹری ڈاکٹر ساجد محمو دچوہان نے کہاکہ آزادکشمیر پائیدار ترقی کے اہداف کے حصول کے حوالہ سے پاکستان کے تمام صوبوں سے بہتر پوزیشن پر ہے۔مستقبل میں کیپیٹل،ڈویژنل ڈویلپمنٹ کے حوالہ سے مختلف منصوبہ جات زیر غور ہیں جن میں پارکس، واک ویز کی تعمیر،ماڈل قبرستان، شہروں کی خوبصورتی، اہم چوکوں اور سڑکات پر روشنی کا انتظام، انتظار گاہ، ماڈل قربان گاہیں، سبزی منڈی، بس اڈے اور کوڑے کو اکٹھا کر کے تلف کرنے کے پراجیکٹس شامل ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سیاحت کے شعبہ کی ترقی کے لیے ٹورازم ڈویلپمنٹ پروگرام بھی زیر غور ہے جس کے تحت پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے ذریعے سیاحت کے شعبہ میں منصوبہ جات شروع کر کے اسے ترقی دی جائے گی تاکہ سیاحت کو فروغ ملنے کے ساتھ ساتھ مقامی سطح پر روزگار کے مواقعے پیدا ہوں اور ریاستی آمدن میں بھی اضافہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ آزادکشمیر کا کل بجٹ 141ارب روپے ہے جس میں سے ترقیاتی بجٹ 28ارب جبکہ نارمل میزانیہ 113ارب روپے ہے۔ سالانہ ترقیاتی پروگرام میں 67 فیصد حصہ انفراسٹرکچر سیکٹر اور 23 فیصد حصہ سوشل سیکٹر، جبکہ 10 فیصد پیداواری سیکٹر کے لیے مختص کیا گیا ہے۔ آزادکشمیر میں سیاحت، ہائیڈرل اور منرلز کے شعبہ میں وسیع پوٹینشل موجود ہے۔ اس وقت آزادکشمیر میں 2700 میگا واٹ بجلی بنائی جا رہی ہے۔ایک سوال کے جواب میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری ترقیات نے کہا کہ میڈیا کی اہمیت کے پیش نظر محکمہ اطلاعات کا ڈیجیٹل میڈیا پراجیکٹ شامل کیا گیا ہے تاکہ حکومتی اقدامات اور مسئلہ کشمیر کو بین الاقوامی دنیا تک پہنچایا جاسکے۔ایک اور سوال کے جواب  میں انہوں نے کہا کہ مستقبل میں ضرورت کے پیش نظر آزادکشمیر میں 125کلومیٹر مین شاہرات اور 2ہزار 165کلومیٹر لنک روڈز بنائی جائیں گی تاکہ رسل و رسائل کی سہولیات میسر آسکیں۔

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم