جمعه 16 نومبر 2018ء
جمعه 16 نومبر 2018ء

نعیم بٹ کی نعش پر سیاست کے پیچھے ذاتی مقاصد کار فرما ہیں۔مسلم لیگ،یوتھ ونگ

 راولاکوٹ (دھرتی نیوز) مسلم لیگ ن اور مسلم یوتھ ونگ کے عہدیداران سردار نجیب ریاض (سنیئر نائب صدر مسلم لیگ ن )، خواجہ ظہور احمد (سنیئر نائب صدر کارپوریشن)، توصیف ریاض (جنرل سیکرٹری یوتھ)، سردار رضوان آفتاب سٹی صدر یوتھ ونگ ، سردار نعیم تحصیل صدر یوتھ نے کہا ہے کہ گزشتہ کچھ دنوں سے راولاکوٹ میں نعیم بٹ کی نعش پر سیاست کی جارہی ہے ۔چند لوگ اپنے مذموم مقاصد کے حصول کیلئے کمشنر پونچھ ڈوثیرن اور ڈپٹی کمشنر پونچھ کے دفتر کے باہر دھرنا دیئے ہوئے ہیں جس کی وجہ سے نظام زندگی مفلوج ہو کررہ گیا ہے لوگوں کی مشکلات میں ہر روز اضافہ ہورہا ہے ۔حکومت اور انتظامیہ کی رٹ متاثر ہو رہی ہے قانون کو ہاتھ میں لیاگیا ہے ۔انتظامیہ اپنی رٹ بحال کرے اور غیر قانونی اقدامات کے مرتکب افراد کے خلاف کاروائی کی جائے ۔ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ اور مسلم یوتھ ونگ کے ان عہدیداران ہفتہ کے روز غازی ملت پریس کلب (رجسٹرڈ ) راولاکوٹ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا انہوں نے کہاکہ ایک مخصوص ٹولہ نے جس کے اپنے مقاصد ہیں نعیم بٹ کے ورثا ءکو بھی یر غمال بنایا ہوا ہے حکومت نے نعیم بٹ کی پارٹی اور ورثاءکے کہنے پر جو ڈیشل کمیشن تشکیل دیا حکومت اور انتظامیہ ورثاءکے ساتھ بھرپور تعاون کررہی ہے لیکن چند عناصر جو نعشوں پر سیاست کے قائل ہیں انتشار پھیلانا چاہتے ہیں ۔ان رہنماﺅں نے کہاکہ جو ڈیشل کمیشن کی رپورٹ آنے تک کسی کو مجرم قرار نہیں دیاجاسکتا ۔جو ڈیشل کمیشن کی رپورٹ کا انتظار کیا جانا چاہیے ۔اس انکوائری رپورٹ میں جو بھی نعیم بٹ کی موت کا ذمہ دار ہو اس کے خلاف کاروائی ہونی چاہیے اور نعیم بٹ کے ورثا ءکو ہر حال میں انصاف ملنا چاہیے لیکن جو لوگ ریاست کے اندر ریاست قائم کرنا چاہتے ہیں اور ذاتی مفادات کے حصول کیلئے لوگوں کی مشکلات میں اضافہ کررہے ہیں ان کے خلاف بھی ہر حال میں کاروائی کی جانی چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ انتظامیہ اپنی ٹانگوں میں جان ڈالے اور اپنی رٹ کو بحال کرے چند لوگوں نے اپنے مقاصد کے حصول کیلئے بلاجواز دھرنے اور احتجاج کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے جو عوامی مشکلات کا باعث بن رہا ہے جب حکومت نے نعیم بٹ کی پارٹی اور ورثاءکی خواہش پر جو ڈیشل کمیشن تشکیل دیا ہوا ہے تو پھر اس کمیشن کی رپورٹ کا انتظار کیاجانا چا ہیے ۔ان رہنماﺅں نے ٹرانسپورٹروں اور تاجروں سے کہا کہ وہ تیس اپریل کو ہڑتال کی جو کال دی گئی ہے اس کا حصہ نہ بنیں اور یہ ثابت کریں کہ وہ کسی کے آلہ کار نہیں ہیں