بدھ 26  ستمبر 2018ء
بدھ 26  ستمبر 2018ء

تیس اپریل کوہڑتال ہو گی ، اپنے مطالبہ سے پیچھے نہیں ہٹیں گے ، جسٹس فار نعیم بٹ کمیٹی

 راولاکوٹ (دھرتی نیوز) جسٹس فار نعیم بٹ شہید کمیٹی کی کال پر کمشنر پونچھ اور ڈپٹی کمشنر کے دفتر کے سامنے احتجاجی دھرنا دسویں روز بھی جاری رہا ۔ہفتہ کو دھرنے میں مرد وں کے علاوہ خواتین کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔ شرکاءدھرنا سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ تیس اپریل کو ہر حال میں شٹر ڈاﺅن اور احتجاج ہوگا ۔اگر کسی نے اس میں رکاوٹ بننے کی کوشش کی تو حالات جو رخ اختیار کریں گے اس کی ذمہ داری حکومت اور انتظامیہ پر ہوگی ۔انہوں نے کہا کہ جسٹس فار نعیم بٹ شہید کمیٹی کی طرف سے جو مطالبات کیے گئے ہیں ان سے پیچھے ہٹنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ۔ ہم آخر ی حدتک جائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ جب تک قاتل ڈی سی اور ایس پی کو معطل نہیں کیاجاتا جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ منظر عام پر نہیں لائی جاتی اس وقت تک احتجاج ، دھرنے اور تحریک جاری رکھی جائے گی ۔انہوں نے ٹرانسپورٹرو ں ، تاجروں ، مختلف مکاتب فکر کے زعماءاور عوام سے کہا کہ وہ تیس اپریل کو ہونے والی ہڑتال اور احتجاج میں ہمارا ساتھ دیں تاکہ نعیم بٹ شہید کے ورثاءکو انصاف کی فراہمی ممکن ہوسکے ۔ اس موقع پر سردار لیاقت حیات ، راولاکوٹ انجمن تاجران کے صدر سردار عبدالنعیم خان، سردار صابر کشمیر ی ایڈووکیٹ، سردار محمد انور خان، سردار اظہر کاشر ، سردار محمد ابراہیم خان، سردار قدیر خان، سردار وسیم خورشید، سردار عمر نذیر کشمیری ، سردار شاہد خورشید، سردار ناصر سرور ، وقا ص لیاقت، یاسر حسرت ، خطاب کیا ۔ انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ نعیم بٹ شہید کے ورثاءکو انصاف کی فراہمی کیلئے آخر ی حدتک جائیں گے ۔دریں اثناءکشمیر ویمن رائٹس آرگنائزیشن کے زیر اہتمام احاطہ عدالت میں احتجاجی دھرنا دیا گیا جس میں نسیم صدیق ، شمیم ایاز کیانی ، تسنیم شوکت اور نعیم بٹ کی رشتہ دار خواتین نے شرکت کی ۔