اتوار 26 جنوری 2020ء
اتوار 26 جنوری 2020ء

دفعہ 144بے اثر ثابت ہوا، موٹر سائیکل سوار بغیر ہلمٹ کے گھوم رہے ہیں

راولاکوٹ(دھرتی نیوز) راولاکوٹ شہر میں ٹریفک کے بڑھتے ہوئے مسائل آئے دن شہریوں کے لیے پریشانی کا سبب بن رہے ہیں۔ضلعی انتظامیہ ان مسائل پر قابو پانے کے لیے کوشاں تو ہے لیکن قانون پر عملدرآمد نہ ہو نے کی وجہ سے”قانون“ پر سے یقین اٹھتا جا رہا ہے۔رواں ہفتے ہاوسنگ اسکیم کے قرین موٹر سائیکل کے ایک حادثے میں نوجوان جاں بحق ہو گیا جس کے بعد ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کی جانب سے دفعہ 144 لگا کر یہ پابندی عائد کی گئی کہ بغیر ہلمٹ کے موٹر سائیکل چلانا جرم ہو گا،پٹرول پمپ کے مالکان بھی پابند ہوں گے کہ وہ  بغیر ہلمٹ کے موٹر سائیکل سوار کو پٹرول نہ دیں۔بظاہر یہ ایک اچھا فیصلہ تھا لیکن اس فیصلے پر دس فیصد بھی عمل نہ ہو سکا۔نوے فیصد موٹر سائیکل سوار  بغیر ہلمٹ کے موٹر سائیکل چلا رہے ہیں اور بغیر کسی ڈر و خوف کے پٹرول پمپ اور سیلز پوائنٹ سے پٹرول بھی ڈلوا رہے ہیں۔اتوار کو ”دھرتی“ کی ایک ٹیم نے مختلف شاہراوں پر یہ مناظر خود دیکھے اور بعض کی تصاویر بھی بنائی ہیں۔ایک ٹریفک پولیس اہلکار نے تو صاف بتایا کہ اسے تو پتہ ہی نہیں کہ اس طرح کی پابندی ہے اور اگر پتہ بھی ہو تو میری کوئی سنتا ہی نہیں۔بات صرف موٹر سائیکلوں کی ہی نہیں،نصف سے زائد رکشہ مالکان بغیر نمبر پلیٹ رکشے چلا رہے ہیں،ٹریفک پولیس پوری کوشش کے باوجود انہیں عارضی نمبرز تک بھی نہ لگوا سکی جس کی وجہ سے حادثات اور جرائم دنوں میں اضافہ ہو رہا ہے۔

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم