اتوار 21 اکتوبر 2018ء
اتوار 21 اکتوبر 2018ء

سینیٹ الیکشن کے سرکاری نتائج جاری،مسلم لیگ(ن)اور اس کے اتحادیوں کے پاس 48 نشستیں

اسلام آباد( صباح نیوز) الیکشن کمیشن نے سینٹ انتخابات کے سرکاری نتائج کااعلان کردیا ہے۔تفصیلی نتیجے کے مطابق باون نشستوں پر ہونے والے انتخابات میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے حمایت یافتہ امیدواروں نے مرکز اور پنجاب میں سب سے زیادہ جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی نے سندھ اور پاکستان تحریک انصاف نے خیبرپختونخواسے زیادہ نشستیں حاصل کیں۔نتائج کے مطابق پاکستان مسلم لیگ (ن) نے 15 پیپلز پارٹی نے 12پاکستان تحریک انصاف نے6، نیشنل پارٹی اور پختونخوا ملی عوامی پارٹی نے دو، دوجبکہ جمعیت علمائے اسلام (ف)، جماعت اسلامی، ایم کیو ایم پاکستان اور پاکستان مسلم لیگ فنکشنل نے ایک ایک نشست پر کامیابی حاصل کی ۔سینیٹ کے انتخاب میں 10آزاد امیدوار بھی کامیاب ہوئے ہیں۔وفاقی دارالحکومت سے مسلم لیگ (ن) کے حمایت یافتہ دونوں امیدوار کامیاب ہوگئے ہیں۔فاٹا سے سینیٹ کی چار نشستوں پر ہدایت اللہ، شمیم آفریدی، ہلال الرحمان اور مرزا محمد آفریدی کامیاب ہوئے ہیں۔سینیٹ کی 52خالی نشستوں پر انتخابات کے بعد پاکستان مسلم لیگ نون ایوان بالا میں سب سے بڑی جماعت کے طور پر سامنے آئی ہے۔پاکستان پیپلز پارٹی دوسرے نمبر پر ہے اور پاکستان تحریک انصاف سینیٹ میں تیسری بڑی جماعت بن گئی ہے۔الیکشن کمیشن کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کے حمایت یافتہ امیدواروں نے مرکز اورپنجاب میں جبکہ پیپلز پارٹی نے سندھ میں زیادہ نشستوں پر کامیابی حاصل کی ہے۔نتائج کے مطابق پاکستان مسلم لیگ نون نے 15 پیپلز پارٹی نے 12پاکستان تحریک انصاف نے6، نیشنل پارٹی اور پختونخوا ملی عوامی پارٹی نے دو، دوجبکہ جمعیت علمائے اسلام (ف)، جماعت اسلامی، ایم کیو ایم پاکستان اور پاکستان مسلم لیگ فنکشنل نے ایک ایک نشست پر کامیابی حاصل کی ہے۔سینیٹ کے انتخاب میں 10آزاد امیدوار بھی کامیاب ہوئے ہیں۔ وفاقی دارالحکومت سے مسلم لیگ ن کے حمایت یافتہ دونوں امیدوار کامیاب ہوگئے ہیں۔فاٹا سے سینیٹ کی چار نشستوں پر ہدایت اللہ، شمیم آفریدی، ہلال الرحمان اور مرزا محمد آفریدی کامیاب ہوئے ہیں۔پنجاب میں مسلم لیگ نون کے حمایت یافتہ گیارہ امیدوار سینیٹر منتخب ہوئے ہیں جبکہ تحریک انصاف نے صرف ایک نشست پر کامیابی حاصل کی ہے۔سندھ میں پیپلز پارٹی کے دس جبکہ پاکستان مسلم لیگ فنکشنل اور متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کا ایک ایک سینیٹر منتخب ہوا ہے۔بلوچستان میں سینیٹ کی گیارہ نشستوں پر بیشتر آزاد امیدوارکامیاب ہوئے ہیں۔خیبرپختونخوا میں تحریک انصاف نے 5نشستیں حاصل کی ہیں۔پاکستان مسلم لیگ نون کے حمایت یافتہ امیدوار پیر صابر شاہ نے عمومی اور دلاور خان نے ٹیکنوکریٹ کی نشست پر کامیابی حاصل کی ہے۔پاکستان پیپلز پارٹی نے دو جبکہ جمعیت علمائے اسلام (ف) اور جماعت اسلامی نے ایک ایک نشست حاصل کی۔