پیر 27  ستمبر 2021ء
پیر 27  ستمبر 2021ء

انتخابات خود کروا کر دھاندلی کا الزام سمجھ سے بالا تر ہے،عمران خان

  اسلام آباد(نیوز ایجنسیاں،دھرتی نیوز) وزیراعظم پاکستان عمران خان نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر کے وزیراعظم کا یہ الزام کہ آزادکشمیر میں حالیہ قانون ساز اسمبلی کے انتخابات میں دھاندلی ہوئی ہے سمجھ سے بالا تر ہے۔دھاندلی تو اس وقت تک نہیں ہو سکتی جب تک الیکشن کمیشن ساتھ نہ دے۔آزاد کشمیر الیکشن کمیشن میں سنیئر ممبر الیکشن کمیشن وزیر اعظم آزادکشمیر کے ہم زلف ہیں اور دھاندلی کا الزام ہم پر لگا رہے ہیں۔سارا الیکشن پراسس ان ہی کی نگرانی میں ہوا اور دھاندلی کا الزام بھی خود لگا رہے ہیں۔انتخابات کے شفاف انعقاد کیلئے الیکٹرونک مشینوں کا استعمال ضروری ہے۔عوام کے ٹیلی فونک سوالات کے براہ راست جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر میں سیاسی طور پر بھرتیوں کے حوالے سے لائے گے ایڈہاک بل پر ہماری حکومت نظرثانی کرے گی اور سب کو انصاف ملے گا۔انہوں نے کہا کہ لاک ڈان سے غریب عوام مشکل کا شکار ہو رہے ہیں، جہاں کوروناکی شرح زیادہ ہے وہاں اسمارٹ لاک ڈاؤن لگائیں،مکمل لاک ڈاؤن کرکے ملکی معیشت کو تباہ نہیں کرنا چاہتے۔ پاکستان میں کورونا کی چوتھی لہر آئی ہوئی ہے، ڈیلٹا ویرینٹ سب سے زیادہ خطرناک ہے، کورونا سے نمٹنے کے بہترین اقدامات میں پاکستان تین ملکوں میں ایک ہے۔ انہوں نے کہا کہ سوائے پاکستان کے ساری دنیا میں رمضان میں مساجد بند ہوئیں، ایس او پیز میں سب سے آسان ماسک پہننا ہے، بند جگہ میں جہاں لوگ زیادہ ہیں وہاں ماسک پہنیں۔انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کی کوشش تھی لاک ڈان کردیں جبکہ سمارٹ لاک ڈاؤن کا فیصلہ بالکل درست ہے جبکہ ہمیں یہ بھی دیکھنا ہے کہ لاک ڈاؤن میں غریب طبقہ کیسے گزارا کرے گا لیکن جب ان سوالات کا جواب نہ ہو تو کبھی لاک ڈاؤن نہ کریں۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بھارتی حکومت نے سوچے سمجھے بغیر لاک ڈاؤن کردیا، بھارتی حکومت نے پیسے والے اوپر کے طبقے کا سوچا، آج ہماری اور بھارت کی معیشت کا فرق دیکھ لیں۔ان کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کے لیے پیغام ہے کہ لاک ڈاؤن کریں گے تو لوگ بھوکے رہیں گے، ہمیں کسی صورت لاک ڈاؤن کرکے اپنی معیشت کو تباہ نہیں کرنا کیونکہ ملکی معیشت مشکل مرحلے سے نکل چکی ہے۔عمران خان نے یہ بھی کہا کہ شادی کی تقریب اور ریسٹورنٹس میں کورونا وائرس تیزی سے پھیلتا ہے جبکہ ملک بھر میں تین کروڑ افراد کو ویکسین لگائی جا چکی ہے اور بھر پور تعاون کرنے پر علمائے کرام کا مشکور ہوں۔انہوں نے کہا کہ جن اسکولوں میں ٹیچرز نے ویکسین نہیں لگوائی ان اسکولوں کو بند کردیں، وفاق چھوٹا سا ہے، ساری نوکریاں صوبوں کے پاس ہیں، صوبوں کو ہدایت کروں گا جن کا کوٹا ہے وہ انہیں ملے۔

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم