17-07-17
احتساب کی آڑ میں شکار کھیلنے کی عادتیں زہر قاتل
اسلام آباد (پی آئی ڈی)17جولائی2017ء وزیر اعظم آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف کو پوری قوم کا اعتما دحاصل ہے ،انہیں عوام کے مسترد عناصر کے واویلے پر پاکستان کی خدمت سے نہیں روکا جا سکتا۔ میڈیا ساسی فنکاروں اور ہدایتکاروں کے بارے میں بھی قوم کو بتائے۔آزاد جموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی کا اجلاس بلا کر وزیر اعظم پاکستان کے حق میں قرارداد بھی منظور کی جائے گی۔نواز شریف کو ہٹانے کی کوششیں سی پیک کو نقصان پہنچانے کے مترادف ہیں جسے پاکستان کی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت حاصل ہوگی۔ افواج پاکستان کو دہشتگردوں کا قلع قمع کرنے پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں ۔ مسلم لیگ ن آزاد کشمیر کی پارلیمانی پارٹی اور مرکزی عہدیداروں کے اجلاس میں وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف کی قیادت پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا گیا ،نواز شریف پاکستان میں جمہوریت اور مضبوط اقتصادی پاکستان کی علامت ہیں ، پاکستان اس وقت اندرونی اور بیرونی سازشوں سے گھیرا ہوا ہے ، اس وقت ملک کو سیاسی عدم استحکام کا شکار کیا گیا تو انارکی پھیلنے کا خطرہ پیدا ہو جائیگا۔مسلح افواج پاکستان کی جانب سے جاری آپریشن ردالفسادکی مکمل حمایت کرتے ہیں اس سے پاکستان کے اندر دہشتگردی کی کمرٹوٹی، نواز شریف ملک کے اتحاد کا نشان ہیں ۔ وزیراعظم نے ان خیالات کا اظہار جموں وکشمیر ہاؤس اسلام آباد میں ایک پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر سپیکر قانون ساز اسمبلی شاہ غلام قادر، سینئر وزیر چوہدری طارق فاروق، وزیر اطلاعات راجہ مشتاق احمد منہاس، رکن کشمیر کونسل عبدالخالق وصی بھی موجود تھے ۔ راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ آئیوری کوسٹ میں اسلامی کانفرنس تنظیم کے وزراء خارجہ کی کانفرنس کے دوران مسئلہ کشمیر پر قراداد کی منظوری ہماری بہت بڑی کامیابی ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ اس موقع پر اسلامی کانفرنس تنظیم کے جموں وکشمیر سے متعلق کنٹکٹ گروپ کے اجلاس میں بھی کشمیریوں کی تحریک آزادی کی کھل کر حمایت کی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ یہ سب اس وجہ سے ممکن ہوا ہے کہ وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف نے مسئلہ کشمیر پر دلیرانہ موقف اپنایا ہے اور دنیا بھر میں بھارت کو پسپائی پر مجبور کر دیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ایسے وقت میں جب وزیر اعظم پاکستان بھارت کو بیک فٹ پر لارہے ہیں اندرون ملک ان کے خلاف سازشوں کا جال بن دیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو ایک طرف ایل او سی پر بھارت کی جارحیت کا سامنا ہے ، افغانستان سے تعلقات کشیدہ ہیں ، ملک کے اندر دہشتگردی پھر سر اٹھانے لگی ہے جبکہ امریکی کانگریس میں بعض لابیاں پاکستان کو دہشتگردوں کی سرپرستی کرنے والا ملک ہونے کی قرارداد پیش کرنے کی تیاریاں کررہی ہیں ۔ ایسے وقت میں جب قوم کو اتحاد و اتفاق کی ضرورت ہے ہمیں چند سیاسی بازی گروں نے آپس میں الجھانا شروع کر دیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ یہ کسی بھی صورت میں پاکستان کے مفاد میں نہیں ہے کہ یہاں احتساب کے نام پر انتقام لیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ ہم کبھی بھی احتساب کے مخالف نہیں ہیں نہ ہو سکتے ہیں ۔ ہم سیاسی لوگ ہیں اور سیاسی طور پر ہی ہمارا مقابلہ کیا جائے ۔ سازشوں کے ذریعے کسی بھی قسم کی تبدیلی لانے کی کوشش کی گئی تو پھر سخت مقابلہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ سیاست کا لبادہ اوڑ ھ کر فنکاروں اور ہدایتکاروں کو پوری قوم کا نمائندہ نہ بنائے ۔ نواز شریف قوم کے متفقہ لیڈر ہیں ان کو سائیڈ لائن کرنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں ۔ ایک سوال کے جواب میں فاروق حیدر نے کہا کہ آئین سے بالا اقدامات سے گریز کیا جائے ، ایک اور سوال کے جواب میں وزیر اعظم نے کہا کہ احتساب کی آڑ میں شکار کھیلنے کی عادتیں ملک کیلئے زہر قاتل ثابت ہونگی۔ انہوں نے کہا کہ جلد ہی قانون ساز اسمبلی کا اجلاس بلا کر نواز شریف کے حق میں قرار داد منظور کی جائے گی ۔ وزیر اعظم نے نیلم ویلی میں بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ کی شدید مذمت کی اور بھارتی فائرنگ کے نتیجے میں شہید ہونے والے پاک فوج کے جوانوں کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر ی قوم پاک فوج کی پشت پر ہے ۔