پیر 21  ستمبر 2020ء
پیر 21  ستمبر 2020ء

اہم خبریں

آزادکشمیر میں تعلیمی ادارے مرحلہ وار کھولنے کا فیصلہ

مظفرآباد(پی آئی ڈی)حکومت آزادکشمیر نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے بند تعلیمی ادارے حفاظتی ایس او پیز کے ساتھ کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تعلیمی ادارے کھولنے سے پہلے تمام اداروں کو ڈس انفیکٹ کیا جائے گا جبکہ طلبہ اور اساتذہ کیلئے ماسک پہننا لازمی ہوگا۔ تعلیمی ادارے کھولنے سے قبل جملہ سرکاری اور پرائیویٹ اساتذہ کی رینڈم سیمپلنگ کی جائے گی۔ حکومت پاکستان جس تاریخ سے تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کرے گی اس کے مطابق آزادکشمیر میں بھی عملدرآمد ہو گا۔ اس بات کا فیصلہ سٹیٹ کو آرڈینیشن کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا۔اجلاس وزیراعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان کی صدارت میں منعقد ہوا۔اجلاس میں وزیر صحت ڈاکٹر محمد نجیب نقی،وزیر تعلیم سکولز بیرسٹر سید افتخار علی گلانی،وزیر تعلیم کالجز وقار نور،وزیر ایس ڈی ایم اے احمد رضا قادری،وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی مصطفی بشیر عباسی،چیف سیکرٹری،سیکرٹری صحت،سیکرٹری سکولز،سیکرٹری کالجز،سیکرٹری مذہبی امور،سیکرٹری ایس ڈی ایم اے،ایڈیشنل سیکرٹری داخلہ اور دگر حکام نے شرکت کی۔اجلاس میں وزیراعظم آزادکشمیر کو بریفنگ دی گئی کہ آزادکشمیر میں طلبہ کی کل تعداد 8لاکھ 78ہزار ہے جس میں سے 4لاکھ 70ہزار طلبہ سرکاری تعلیمی اداروں اور 4لاکھ 8ہزار طلبہ پرائیویٹ تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم ہیں۔اجلاس سے خطاب کے دوران وزیراعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ تعلیمی ادارے کھولنے سے پہلے دعائیہ تقریبات منعقد کی جائیں رب کریم کے فضل و کرم سے کورونا وباء پر بڑی حد تک قابو پا لیا گیا ہے آزادکشمیر کے اندر گزشتہ 24گھنٹوں میں صرف ایک مریض سامنے آیا ہے کورونا وباء کا اب تک کوئی علاج سامنے نہیں آیا لیکن رب کریم کا احسان ہے کہ آزادکشمیر میں بہت کم لوگ متاثر ہوئے آزادکشمیر میں کورونا سے کل 2306افراد متاثر ہوئے جن میں سے 65مریض جاں بحق ہوئے اس وقت 87مریض زیر علاج ہیں جن میں سے 77مریض گھروں میں قرنطینہ ہیں جبکہ 10مریض زیر علاج ہیں آزادکشمیر کے اندر کورونا وباء کے کنٹرول کا کریڈٹ جملہ متعلقہ محکمہ جات کو جاتا ہے جنہوں نے مل کر کام کیا حفاظتی تدابیر کے حوالے سے آزادکشمیر پورے پاکستان میں پہلے نمبر پر رہا اور حکومت نے بروقت فیصلے کیے۔اجلاس سے خطاب کے دوران وزیراعظم راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ تعلیمی ادارے کھلنے ضروری ہیں مگر احتیاط بھی لازمی ہے کورونا وباء ابھی ختم نہیں ہوئی اس لیے احتیاط اور حفاظتی تدابیر اختیار کی جائیں وزیر اعظم آزادکشمیر نے کہاکہ تعلیمی اداروں کی بحالی کے سلسلہ میں پہلے مرحلے میں یونیورسٹیز،میڈیکل کالجز،ڈگری کالجز،اور ہائی سکولوں میں بڑی کلاسز کا اجراء کیا جائے گا تعلیمی اداروں میں حفاظتی تدابیر پر بہر  صورت عملدرآمد کرایا جائے گا۔  

پاکستان

پی ایس ایل 2020 کے بقیہ میچز کے شیڈول کا اعلان کردیاگیا

اسلام آباد (دھرتی نیوز)پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) 2020 کے بقیہ میچز کے شیڈول کا اعلان کردیا۔کرکٹ بورڈ کی جانب سے کیے گئے اعلان کے مطابق پی ایس ایل فائیو کے باقی ماندہ چار میچز  14، 15 اور 17 نومبر کو کھیلے جائیں گے۔پی سی بی نے بتایا کہ یہ چاروں میچز قذافی اسٹیڈیم لاہور میں کھیلے جائیں گے۔واضح رہے کہ عالمگیر وبا کورونا وائرس دنیا بھر میں پھیلنے کے بعد پاکستان میں بھی اس مہلک وائرس کے کیسز سامنے آنا شروع ہوگئے تھے۔اس دوران عالمی ادارہ صحت کی جانب سے جاری سماجی فاصلہ اختیار کرنے کی گائیڈ لائنز کے مطابق لوگوں کو گھروں تک محدود کرنے کے لیے کئی ممالک شٹ ڈاؤن کی حالت میں چلے گئے اور لاک ڈاؤن لگادیا گیا تھا۔اسی دوران پی ایس ایل میں شرکت کے لیے پاکستان میں موجود غیر ملکی کھلاڑی، کوچز، اسٹاف اور ٹیکنیشنز نے بھی اپنے اپنے ممالک کی راہ لی۔پی سی بی نے آخر مرحلہ ختم کرکے ایونٹ کا اختتام ناک آؤٹ مرحلے پر کرنے کا

انٹرنیشنل

فورڈ“اور جنرل الیکٹرک کا معاہدہ، 100 دنوں میں 50 ہزار وینٹی لیٹرز تیار کرنے کا منصوبہ

” نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکہ کی گاڑیاں بنانے والے کمپنی فورڈ اور جنرل الیکٹرک اب مل کر صرف 100 دنوں میں 50 ہزار وینٹی لیٹرز بنائیں گی۔خیال رہے کہ امریکہ میں کورونا وائرس کے باعث پوری دنیا میں اب تک سب سے زیادہ کیسز سامنے آئے ہیں جبکہ اموات میں بھی تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ بی بی سی کے مطابق دونوں کمپنیوں کا کہنا ہے کہ وہ وینٹی لیٹرز کا غیر پیچیدہ ڈیزائن بنائیں گی اور مشیگن میں فورڈ کے گاڑیاں بنانے والے پلانٹ کو وینٹی لیٹرز بنانے کے لیے استعمال کریں گے۔تاہم یہ کام وہ 20 اپریل سے شروع کریں گے، اور اس آسان ڈیزائن کی بدولت وہ جلد از جلد زیادہ سے زیادہ وینٹی لیٹرز بنا سکیں گے۔خیال رہے کہ امریکی صدر ڈانلڈ ٹرمپ نے دونوں کمپنیوں پر اس حوالے سے اپنی ٹویٹس میں تنقید کی تھی تاہم اب وہ ان کی تعریف کر رہے ہیں۔فورڈ تین شفٹس کے ذریعے 24 گھنٹے کام کر کے وینٹی لیٹرز بنانے کی کوشش کرے گا تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ امریکہ میں وینٹی لیٹرز کی سب سے ز

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم