جمعرات 26 اپریل 2018ء
جمعرات 26 اپریل 2018ء

اہم خبریں

پاکستان سے الحاق دانشمندانہ فیصلہ تھا،صدر آزاد کشمیر

کوئٹہ(دھرتی نیوز) صدر آزاد جموں وکشمیر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ پاکستان اور کشمیر ایک دوسرے کے لئے لازم و ملزوم ہیں اور جزو لانیفک ہیں۔ دنیا کی کوئی طاقت انہیں کو جدا نہیں کر سکتی۔ ان خیالات کا اظہار صدر آزادجموں وکشمیر نے کوئٹہ میں نیشنل سکیورٹی ورکشاپ بلوچستان کے زیر اہتمام تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صدر نے کہا کہ کشمیر کے لوگ گزشتہ دو صدیوں سے آزادی کی جنگ لڑ رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ پہلے وہ مہاراجہ سے آزادی حاصل کرنے کے لئے جنگ لڑتے رہے اور اب70 سالوں سے بھارت سے اپنی آزادی اور حق خودارادیت کے لئے جدوجہد کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ70 سال قبل بھارت نے2 لاکھ 47ہزار معصوم کشمیریوں کا قتل عام کیا جو ڈوگرہ و بھارتی افواج اور آر ایس ایس کے انتہاءپسندوں کے ہاتھوں معصوم کشمیریوں کا دوسری عالمی جنگ کے بعد سب سے بڑی نسل کشی تھی اور اڑھائی لاکھ کشمیریوں کو ان کے گھروں سے زبردستی نکال کرنو آزاد پاکستان کی طرف دھکیل دیا گیا۔ صدر آزاد جموں وکشمیر نے کہا ہے کہ بھارت کی یہ پالیسی ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں معصوم کشمیریوں پر اتنا ظلم و جبر ڈھائے کہ ان کے جذبہ حریت کو کچل کر انہیں جدوجہد آزادی سے دستبردار ہونے پر مجبور کر دے اور پاکستان و حریت رہنماﺅں کے ساتھ مذاکرات کے دروازے بند کر دے تاکہ اس مسئلے کے جمہوری حل سے راہ فرار اختیار کر سکے۔ جبکہ پاکستان کی پالیسی ہے کہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق اس مسئلے کا پر امن، جمہوری اور پائیدار حل تلاش کیا جانا چاہیے۔ صدر مسعود خان نے مقبوضہ کشمیر کی تشویشناک صورتحال پر بات کرتے ہوئے کہا کہ برھان مظفر وانی کی شہادت کے بعد کشمےرےوں کے دلوں مےں جدوجہد آزادی کےلئے اےک نےا جو ش و ولولہ پےدا ہوا ہے ےہی وجہ ہے کہ بھارت کی تمام تر ظالمانہ کاروائےوں ، تشدد ، قتل و غارت گری کے باوجود نڈر و بے باک کشمےری اےک مضبوط و مصمم ، عزم اور حوصلے کے ساتھ آزادی کےلئے اپنی جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہےں ۔ انہوں نے کہا کہ نام نہاد جمہورےت اور سےکولرزم کی دعوے دار مودی سرکار نے معصوم کشمےرےوں پر ظلم و بربرےت اور جارحےت کے تمام رےکارڈ تو ڑ دئےے ہےں معصوم کشمےری نوجوانوں کو سرعام قتل کےا جار ہا ہے ۔ پےلٹ گنوں سے انہےں بےنائی سے محروم اور معذور کےا جا رہا ہے۔ انہےں غےر قانونی طور پر حراست مےں لےا جاتا ہے اور دوران حراست ہی انہےں غائب اور قتل کےا جا رہا ہے ۔ خواتےن کے ساتھ رےپ اور عصمت دری کی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قابض بھارتی افواج نے پورے جموں وکشمےر کا محاصرہ کرکے کرفےو جےسے حالات پےدا کر رکھے ہےں اور سرچ آپرےشن کی آڑ مےں کشمےرےوں کے گھروں پر غےر قانونی طور پر چھاپے مارے جار ہے ہےں جس سے چادر اور چاردےواری کے تقدس کو بری طرح سے پامال کےا جار ہا ہے۔ کشمےرےوں کے گھروں اور ان کی املاک کو تباہ کےا جار ہا ہے۔ صدر مسعود خان نے کہا ہے کہ کشمیریوں نے 19جولائی1947ءکو پاکستان کے ساتھ الحاق کا دانشمندانہ فیصلہ کیا ہے اور آج بھی کشمیری اپنے خون سے آزادی کے پودے کو سیج رہے ہیں اور یہی نعرہ بلند کر رہے ہیں کہ جاﺅ بھارت واپس جاﺅ، ہم کیا چاہتے ہیں آزادی، ہم لے کے رہیں گے آزادی، پاکستان سے رشتہ کیا لا الہٰ الا اللہ اور کشمیر بنے گا پاکستان۔

پاکستان

متاثرین زلزلہ کے ترقیاتی فنڈز سے متعلق کیس کی سماعت ، نیب سے تحقیقات کا عندیہ

اسلام آباد(صباح نیوز)چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں عدالت عظمی کے تین رکنی بینچ نے زلزلہ متاثرین کے لئے ملنے والے ترقیاتی فنڈز کے استعمال سے متعلق کیس کی سماعت کی تو ایڈیشنل اٹارنی جنرل راناوقار کا کہنا تھا کہ عدالت نے سیکرٹری فنانس اور آڈیٹر جنرل کو وضاحت کے لیے بلایا تھا،جس پر چیف جسٹس نے ان سے استفسار کیاکہ ہمیں یہ بتائیں زلزلہ متاثرہ شہر بالا کوٹ کا کیا بنا؟کیا غیر ملکی امداد قومی خزانے میں ڈال دی گئی؟ایڈیشنل اٹارنی جنرل کاکہناتھا کہ پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ فنڈز میں جو رقم مختص ہوتی وہ وزارت خزانہ جاری کرتی ہے ، چیف جسٹس نے کہاکہ زلزلے کے وقت مخیر حضرات نے فنڈز دئیے،غیر ملکی امداد بھی پاکستان آئی، ان تمام فنڈز کا کیا بنا ؟زلزلہ متاثرین کیلئے آنے والے کمبل فروخت ہو گئے۔یہ بتائیں مجموعی طور پر متاثرین کے لیے کتنی امداد آئی تو وزارت خزانہ کے حکام نے بتایا کہ بیرون ملک سے 2.89بلین ڈالر امداد آئی، چیف جسٹس نے استفسار ک

انٹرنیشنل

عالمی منڈی میں خام تیل کے نرخ بڑھ گئے

سنگاپور (صباح نیوز)عالمی منڈی میں کاروباری ہفتے کے پہلے روز خام تیل کے نرخوں میں اضافہ ہونے کا رجحان برقرار رہا، سنگا پور مرکنٹائل ایکس چینج میں نیویارک مین کنٹریکٹ کے تحت برنٹ نارتھ کروڈ کی جون کے لئے سپلائی 74.07 ڈالر فی بیرل اور ڈبلیو ٹی آئی کی سپلائی کے سودے 3 سینٹ ڈاﺅن کے ساتھ 68.37 ڈالر فی بیرل پر طے پائے۔امریکی آئل ڈرلرز نے پانچ نئے کنووں سے تیل کی پیداوار شروع کر دی ہے جس کے بعد کل پیداواری کنﺅں کی تعداد بڑھ کر820 ہو گئی ہے۔امریکا کی روزانہ کی خام تیل کی پیداوار 10.54ملین بیرل یومیہ تک آ گئی ہے جبکہ روس کی گیارہ ملین بیرل یومیہ سے زائد ہے۔

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم