منگل 11 مئی 2021ء
منگل 11 مئی 2021ء

کورونا وائرس کے پھیلاؤ میں خطرناک اضافہ،پونچھ ڈویژن میں مزید سختی

راولاکوٹ (کشمیر دھرتی)پونچھ ڈویژن میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ میں خطرناک اضافہ کے پیش نظر پابندیاں مزید سخت کردی گئی ہیں اور ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے والوں کے ساتھ سختی سے نمٹنے کی حکمت عملی مرتب کی گئی ہے، جملہ تعلیمی ادارہ جات، مدارس بشمول میڈیکل کالج، پونچھ یونیورسٹی 28اپریل تک بدستور بند رہیں گے، لازمی سروسز کے علاوہ تمام دفاتر بھی 28اپریل تک بند رہیں گے، جمعہ اور ہفتہ کاروباری سرگرمیاں معطل رہیں گی، این سی او سی کے فیصلہ کے مطابق آزادکشمیر بھر میں ہفتہ اور اتوار کو بین الصوبائی ٹرانسپورٹ بند رہے گی جبکہ ہفتہ اور اتوار کو پونچھ میں اندرون ضلع مکمل طور پر پبلک ٹرانسپورٹ بند رہے گی۔ بازاروں اور ٹرانسپورٹ میں ماسک نہ پہنے پر بھاری جرمانے کیے جائیں گے۔ ماہ رمضان کے دوران جملہ ہوٹلز /ریسٹورنٹ کو سحر و افطار کے اوقات کے دوران صرف پارسل کی حد تک کھولے جانے کی اجازت ہو گی۔بزرگوں اور بچوں کا بازار میں داخلہ ممنوع ہو گا، نماز تراویخ اور جمعہ کے اجتماعات میں ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد کروایا جائے ، تمام سرکاری اور پرائیویٹ ہاسٹلز بند رہیں گے۔ ان خیالات کا اظہار گزشتہ روز جمعہ کو کمشنر پونچھ ڈویژن مسعود الرحمان، ڈپٹی کمشنر پونچھ چوہدری کاشف حسین، ایس ایس پی پونچھ چوہدری ذوالقرنین سرفراز، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر راجہ عارف حسین، ڈی ایچ او پونچھ ڈاکٹر محمد حیات، ایڈیشنل ڈی ایچ او پونچھ ڈاکٹر سیاب افضل کیانی نے غازی ملت پریس کلب راولاکوٹ میں ہنگامی پریس بریفنگ کے دوران کیا۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع پونچھ میں اپریل کے پہلے دو ہفتوں میں 569 افراد کورونا میں مبتلا ہوئے اور29اموات ہو واقع ہوئی ہیں، کورونا وائر س کے پھیلاؤ اور اموات کی شرح میں جو اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے وہ انتہائی خطرناک اور بھیانک ہے اگر ایسی صورت حال برقرار رہی تو بہت بڑا انسانی المیہ جنم لے سکتا ہے، اب تو ہسپتالوں میں جگہ کم پڑ گئی ہے تاہم حکومت اور انتظامیہ ان تمام ہنگامی حالات سے نمٹنے کیلئے اقداما ت کر رہی ہے لیکن جب تک عوام تعاون نہیں کریں گے اس وبا کے خلاف جنگ میں ہم اپنے اہداف حاصل نہیں کرسکیں گے، اگر لوگوں نے احتیاطی تدابیر اختیار نہ کیں تو پھر ہمیں مجبوراً اس سے بھی سخت اقدامات کرنا ہو ں گے، موجودہ صورت حال کے پیش نظر سی ایم ایچ راولاکوٹ میں مزید وارڈ قائم کئے گئے ہیں جبکہ دیگر پانیولہ، بن جونسہ سمیت دیگر طبی مراکز کو بھی کورونا کے مریضوں کے لئے تیار رکھا گیا ہے، انہوں نے بتایا کہ کورونا سے بچاؤ کیلئے ویکسی نیشن کا عمل شروع کر دیا گیا ہے، اس وقت تک پونچھ میں ساٹھ سال سے زائد عمر کے 6ہزار کے لگ بھگ لوگوں کو ویکسی نیشن کے عمل سے گزار چکے ہیں، پونچھ میں سی ایم ایچ راولاکوٹ، ڈسٹرکٹ کمپلیکس جی بلاک، ہجیرہ، عباسپور میں ویکسی نیشن کی جارہی ہے جبکہ مزید سینٹرقائم کئے جارہے ہیں تاکہ جلد سے جلد لوگوں کو اس عمل سے گزارا جا سکے، جیلوں میں قیدیوں کو بھی ویکسین لگانے کا عمل شروع ہو چکا ہے، اس وقت ضلع پونچھ میں کورونا کے پھیلاؤ کی شرح 26فیصد سے زائد ہے جبکہ باغ، سدھنوتی میں 13فیصد کے لگ بھگ اور حویلی میں دو فیصد کے قریب ہے، ایس او پیز کی خلاف ورزیو ں پر 8400کے قریب افراد جن میں تاجران، ٹرانسپورٹرز، عام لو گ شامل ہیں کے خلاف کارروائیاں کی گئی اور 17لاکھ کے لگ بھگ جرمانے بھی کئے گئے، پریس بریفنگ میں انہوں نے بتایا کہ ضلع پونچھ میں ایک ہفتہ کا مکمل لاک ڈاؤن، ٹرانسپورٹ کی بندش، تعلیمی ادارہ جات بھی بند کیے گئے لیکن متاثرہ لوگوں کی تعداد میں کمی نظر نہیں آ رہی جو انتہائی خطرناک و تشویشناک ہے، اگر لوگوں نے ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کیا تو اس سے سخت اقدامات کرنے پڑیں گے، کمشنر پونچھ نے محکمہ صحت کو ہدایت کی ہے کہ رینڈم سپلنگ میں اضافہ کیا جائے، ، خلاف ورزیوں کی صورت میں سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ ساٹھ سال اور اس سے زائد عمر کے افراد سے گزارش کی جاتی ہے وہ ویکسینیشن سنٹر سے رجوع کریں ساٹھ سے ستر سال کے درمیان کے افراد اپنا شناختی کارڈ نمبر 1166 پر مسیج کریں اور 70 سال سے زائد افراد اپنا اصل شناختی کارڈ لے کر ویکسینیشن سنٹر پر تشریف لائیں۔   

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم